پی پی 7 راولپنڈی؛ دوبارہ گنتی کی درخواست مسترد

الیکشن کمیشن نے پنجاب اسمبلی کے حلقہ پی پی 7 کے الیکشن میں پی ٹی آئی امیدوار کی دوبارہ گنتی کی درخواست مسترد کر دی ہے۔

تفصیل کے مطابق ضمنی انتخابات میں پی پی 7 کہوٹہ میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے معاملے پر الیکشن کمیشن نے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار شبیر اعوان کی دوبارہ گنتی کی درخواست مسترد کردی۔

چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی سربراہی میں پانچ رکنی بنچ نے سماعت کی۔ مسلم لیگ ن کے راجہ صغیر اور پی ٹی آئی کے شبیر اعوان الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے۔ پی ٹی آئی کے شبیر اعوان نے دوبارہ گنتی کی درخواست دی تھی۔

وکیل شبیر اعوان نے الیکشن کمیشن کو بتایا کہ درخواست گزار ضمنی انتخاب پی پی 7 پر 49 ووٹ سے ہارا اور ہماری دوبارہ گنتی کی درخواست پر گنتی نہیں کرائی جا رہی ہے۔

چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ الیکشن کمیشن میں تو آپ کی جانب سے کوئی درخواست دائر نہیں کی گئی اور کل شام پانچ بجے تک الیکشن کمیشن کو کوئی درخواست نہیں آئی۔

انھوں نے مزید کہا کہ آپ نے ہائی کورٹ کے فیصلے کے بعد درخواست دائر کی ہے۔ آپ نے الیکشن کمیشن پر الزام لگایا کہ الیکشن کمیشن ہماری درخواست کو دیکھ نہیں رہا۔ بتائیں آپ کی درخواست کب آئی؟ وکیل درخواست گزار نے دلائل دئیے کہ میری جیت کا مارجن بہت کم ہے، اس لئے دوبارہ گنتی کی جائے۔

پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما راجہ صغیر کے وکیل نے الیکشن کمیشن کو بتایا کہ شبیر اعوان کے پاس دھاندلی کے کوئی ثبوت نہیں ہیں۔ یہ لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کے بعد الیکشن کمیشن آئے۔ انھوں نے مزید کہا کہ پہلے انھوں نے پورے حلقے میں گنتی کا مطالبہ کیا اور اس کے بعد 21 پولنگ سٹیشن کا مطالبہ لے کر آئے۔

دونوں جانب سے دلائل سننے کے بعد الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی امیدوار کی درخواست مسترد کردی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں