چینی کا زیادہ استعمال صحت کے لئےخطرناک

آپ جتنا میٹھا کھائیں گےوٹامنز اور منرلز کو اتنا ہی کم استعمال کریں گے، اگر آپ زیادہ چینی کھا رہے ہیں تو آپ کو ان نقصانات کا سامنہ کرنا پڑ سکتا ہے۔ موٹاپا،ذیابیطس، دل کی شریانوں سے جڑے امراض، دانتوں کے مسائل اور متعدد دیگر بیماریوں کا خطرہ بڑھ سکتا ہے۔

آج کے دور میں لوگ پیکنگ فوڈز استعمال کر رہے ہیں، ایسی صورتحال میں وہ اپنے جسم میں بہت زیادہ شوگر لے رہے ہیں جس کا براہ راست اثر ہمارے جسم پر پڑتا ہے، تو آئیے جانتے ہیں ان کی وجہ سے ہونے والے سنگین مسائل کے بارے میں۔

چینی کے زیادہ استعمال ے ہونے والی بیماریاں

توانائی میں تبدیلی

جسم میں بلڈ شوگر لیول کو برقرار رکھنا بہت ضروری ہے۔ جب بھی آپ میٹھی چیزیں کھاتے ہیں تو یہ پیٹ کے خلیوں میں جاتی ہے اور انسولین خارج کرتی ہے جس سے آپ کو توانائی ملتی ہے۔ جب آپ ضرورت سے زیادہ میٹھی چیزیں کھاتے ہیں تو یہ ضرورت سے زیادہ نیند یا جلدی تھکن کا باعث بن سکتی ہے۔

چہرے پر برے اثرات

جب بھی آپ چینی کا زیادہ استعمال کرتے ہیں تو اس کا براہ راست اثر آپ کے چہرے پر پڑتا ہے، اس لیے اکثر پرانے زمانے میں لوگ زخموں یا چوٹوں کے وقت میٹھی چیزیں کھانے سے انکار کر دیتے تھے کیونکہ اس کی وجہ سے انسولین تیل کو بڑھا سکتی ہے۔ جلد میں غدود، جو زخم بھرنے یا مہاسوں کی پریشانی کا باعث بنتے ہیں۔

وزن کا بڑھنا

جو لوگ جم جاتے ہیں وہ اکثر چینی کے استعمال سے دور رہتے ہیں کیونکہ اس کے استعمال سے آپ کی کمر کے دونوں طرف چربی بڑھنے لگتی ہے جس کی وجہ سے آپ کا معدہ تیزی سے باہر آنے لگتا ہے اور ایسی صورت میں آپ کا وزن تیزی سے بڑھنے لگتا ہے اس لیے بہت زیادہ چینی کھانے سے گریز کریں۔

بار بار نزلہ زکام

ہم اکثر اپنا وقت بچانے کے لیے پیکنگ فوڈز کا استعمال کرتے ہیں۔ بسکٹ، جوس، فروٹ، کیک جیسی پیکنگ والی غذا میں چینی کی بھرپور مقدار ہوتی ہے، جو جسم میں گندا انسولین خارج کرتی ہے، جس کی وجہ سے آپ کو وائرل بخار، فلو کے مسائل ہونے لگتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں