عمران خان ملک میں آگ لگانا چاہتے ہیں،مریم اورنگزیب

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ ملک میں آگ لگانا چاہتے ہیں۔

وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ آج ایک شخص ٹی وی سکرین پر نمودار ہوا جو خوف اور گھبراہٹ کا شکار تھا، لائٹ اور کیمرہ دینے والے بھی آج عمران خان کی پریس ٹاک سے غائب تھے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان نے آج بار بار کہا کہ پاکستان کی سب سے بڑی سیاسی جماعت کو فوج سے لڑانے کی کوشش کی جا رہی ہے، عمران خان نے کہا کہ ان کی پارٹی کو توڑنے کی کوشش کی جا رہی ہے، عمران خان نے کہا کہ انہوں نے توشہ خانہ میں کوئی خلاف ورزی نہیں کی، اگر کوئی پی ٹی آئی کو نقصان پہنچا رہا ہے تو اس شخص کا نام عمران خان ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ عمران خان صاحب ! آپ کے چیف آف اسٹاف اور ترجمان نے آپ کا لکھا ہوا سکرپٹ نجی چینل پر پڑھا، نجی چینل نے تمام صحافتی تقاضوں کی دھجیاں اڑاتے ہوئے اسے آن ایئر کیا، آپ کے لکھے ہوئے بیان کو آپ کے چیف آف اسٹاف نے پڑھا۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان اس لئے گھبرائے ہوئے تھے کہ انہوں نے اپنی پارٹی کے سوشل میڈیا کے ٹرولز کے ذریعے شہدا کے خلاف مہم چلائی، عمران خان نے ان شہداء کے خلاف مہم چلائی جنہوں نے وطن عزیز کے لئے اپنی جانوں کے نظرانے پیش کئے، عمران خان کے اکسانے پر سوشل میڈیا پر شہداء کے خلاف بھرپور مہم چلائی گئی، جب ٹرولرز پکڑے گئے تو انہوں نے کہا کہ ہم نے عمران خان کے کہنے پر یہ مہم چلائی۔

انہوں نے کہا کہ یہ مہم پاکستانیوں، شہداء کی فیملیوں اور مسلح افواج کے خاندانوں نے بھی دیکھی، کوئی محب وطن پاکستانی اپنی فوج اور شہداء کے بارے میں ٹرولنگ کا سوچ بھی نہیں سکتا۔جو نفرت کے بیج عمران خان نے بوئے آج وہ اسے کاٹ رہے ہیں، عمران خان کی پوری سیاست نفرت، فتنہ، انتشار، غنڈہ گردی اور فساد پر مبنی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ شہداء کی فیملیوں کے خلاف پی ٹی آئی کے ٹرولرز اور بشریٰ بی بی کے بیٹے ارسلان نے مہم چلائی،آج عمران خان اپنا موازنہ نواز شریف کے ساتھ کرتے ہیں، نواز شریف تین مرتبہ کے منتخب وزیراعظم تھے، ان کے سینے میں بھی راز تھے اور انہوں نے ملک کی خاطر خاموشی اختیار کی، نواز شریف نے اس وقت کہا تھا کہ ادارے آئینی حدود میں رہ کر کام کریں، آج بھی ہمارا یہی موقف ہے۔

وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے پریس کانفرنس میں کہا کہ عمران خان کہتے ہیں کہ ادارہ سیاست میں مداخلت کرے، عمران خان کہتے ہیں کہ اگر ادارہ ان کی کرسی نہ بچائے تو وہ جانور ہے، عمران خان کے چیف آف اسٹاف، ترجمان اور نمائندے نے جو بیان دیا، وہ عمران خان کی ہدایت پر دیا، تمام ثبوت عوام کے سامنے پیش کئے جائیں گے، عمران خان کے ترجمان نے کہا کہ لانس نائیک سے لے کر بریگیڈیئر تک پاکستان تحریک انصاف کے ساتھ منسلک ہیں، عمران خان نے انہیں اپنے اوتھ کی خلاف ورزی کرنے پر اکسایا، عمران خان نے فوج کی کمان کے احکامات ماننے سے انکار کرنے پر انہیں اکسایا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان نے خیالی میڈیا سیل کو حکومت پاکستان کے ساتھ جوڑا اور الزام عائد کیا کہ یہ میڈیا سیل حکومت پاکستان کے ساتھ شہداء کے خلاف مہم چلا رہا ہے، یہ عمران خان کی ذہنیت ہے، وہ ملک میں آگ لگانا چاہتے ہیں، انہوں نے اداروں کے اندر بغاوت کی کال دی،عمران خان کو معیشت تباہ کرنے، ملک کی اکائیوں کو توڑنے، ملک کے نوجوانوں کو بے روزگار کرنے پر اقتدار سے الگ کیا، جب انہیں اقتدار سے الگ کیا تو انہوں نے کہا کہ رجیم چینج ہے، 8 مارچ کا مراسلہ انہوں نے 28 مارچ کو اس وقت نکالا جب انہیں پتہ چلا کہ تحریک عدم اعتماد کامیاب ہو رہی ہے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان نے فارن فنڈنگ لے کر اپنی پارٹی کو فارن ایڈڈ پارٹی ڈیکلیئر کرایا، عمران خان نے اپنی پارٹی کو بھی خراب کیا، ملک کو بھی خراب کیا اور اب اداروں کی ساکھ کو بھی خراب کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، جب فارن فنڈنگ لی جاتی ہے تو پھر کمٹمنٹس بھی پوری کی جاتی ہیں، عمران خان نے خیرات کے پیسے لے کر ذاتی استعمال میں لائے، عمران خان نے جعلی بیان حلفی جمع کروائے، اپنے ملازمین کے نام پر پیسے منگوائے، آج اس کی تحقیقات ہو رہی ہیں تو وہ خوف میں مبتلا ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں