‘لاہور جلسے میں قوم کو بتاؤں گا حقیقی آزادی ہوتی کیا ہے’

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ13اگست کو لاہور میں پاکستان کی حقیقی آزادی کے لیے جلسہ کروں گا، وہاں لوگوں کو بتاؤں گا کہ حقیقی آزادی ہوتی کیا ہے؟۔

وفاقی دارالحکومت میں اقلیتی کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پاکستان تحریک انصاف اور سابق وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ شہباز گل کے ڈرائیور کی چھوٹی سی بیٹی کو ماں سے ملنے نہیں دیا گیا، 13اگست کو لاہور میں پاکستان کی حقیقی آزادی کے لیے جلسہ کروں گا، وہاں لوگوں کو بتاؤں گا کہ حقیقی آزادی ہوتی کیا ہے؟۔

عمران خان نے کہا کہ ملک اس وقت تک آگے نہیں بڑھ سکتا جب تک یہاں انصاف نہ ہو۔ ہمارے دین میں تمام انسان برابر ہیں۔ نبیﷺ نے ریاست مدینہ بنائی اور معاہدہ کیا۔ میثاق مدینہ میں سب کو برابر کا شہری بنایا۔ چار خلفائے راشدین میں سے دو خود عدالت میں پیش ہوئے۔ کتنے ملکوں میں ہوتا ہے سربراہ حکومت کے خلاف فیصلہ ہو، انصاف کا مطلب ہے کہ کمزور اور طاقت ور قانون کے سامنے برابر ہوں۔

انہوں نے کہا کہ ہم تمام اقلیتوں کو برابر کا شہری سمجھتے ہیں، ہم پاکستان میں اقلیتوں کو برابر کے حقوق دیں گے۔انہوں نے کہا کہ امریکا میں ابھی 4 مسلمانوں کو مار دیا گیا صرف اس لیے کہ وہ مسلمان تھے، نبی اکرم صلی اللّٰہ علیہ وسلم نے تمام غیر مسلموں سے میثاق مدینہ کیا، انسانی معاشرہ ہوتا ہی تب ہے جب اس میں انسانیت ہو۔

پی ٹی آئی چیئرمین کا کہنا تھا کہ قائد اعظم کو شروع میں ہندو اور مسلمانوں کا ایمبیسڈر سمجھا جاتا تھا،جب انہیں اس بات کا اندازہ ہوگیا کہ کانگریس میں موجود لوگ ہندوؤں کی آزادی چاہتے تھے، تو اس کے بعد قائد اعظم نے مسلمانوں کے لیے جدوجہد کا آغاز کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں