پی ٹی آئی لانگ مارچ: خاتون پر پستول تاننے والا ایس ایچ او نوکری سے برخاست

صوبائی وزیرداخلہ پنجاب کرنل (ر) ہاشم ڈوگر نے کہا ہے کہ 25 مئی کو پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی ) لانگ مارچ کے دوران خاتون پر پستول تاننے والے ایس ایچ او کو برخاست کردیا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر صوبائی وزیرداخلہ پنجاب کرنل (ر) ہاشم ڈوگر نے کہا کہ سب انسپکٹر عابد جٹ جس نے 25 مئ کو ایک نہتی اور پرامن خاتون پہ پستول تانا کو آج محکمانہ کاروائی کر کے مجاز اتھارٹی نے سروس سے ڈسمس کر دیا ہے۔


انہوں نے کہا کہ پنجاب پولیس ایک پروفیشنل ادارہ ہے اور کالی بھیڑوں کو برداشت نہئیں کیا جا ئے گا۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کرنل (ر) ہاشم ڈوگر نے کہا کہ سب انسپکٹر عابد جٹ جس نے 25 مئی کو ایک نہتی اور پرامن خاتون پہ پستول تانا تھا، آج اسے نوکری سے برخاست کردیا ہے۔ پولیس نے محکمانہ انکوائری کرکے ایس ایچ او کو نوکری سے برخاست کیا، انکوائری میں ثابت ہوا ہے کہ ایس ایچ او کو پستول تاننے کی کوئی ہدایت نہیں تھی۔جن لوگوں نے زیادتیاں کی آئندہ چند دن میں ایسی اور بھی کارروائیاں ہونگی۔

نواز شریف کی وطن واپسی کی خبروں پر وزیر داخلہ پنجاب نے کہا کہ نواز شریف واپس آتے ہیں تو قانون کے مطابق کارروائی ہوگی، نوازشریف نے علاج کرایا یا نہیں الگ معاملہ ہے لیکن قانون سب کیلئے ایک ہے۔انہوں نے عمران خان کی نا اہلی سے متعلق خبروں پر کہا کہ یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ سزا یافتہ واپس آکر سیاست کرے اور عمران خان نااہل ہوں، عمران خان کو نااہل کس بنیاد پر کیا جائے گا، انہوں نے ایسا کیا جرم کیا ہے جو انہیں نااہل کیا جائے گا۔

ہاشم ڈوگر نے کہا کہ 25 مئی کے واقعات کی تحقیقات جاری ہیں، جس نے قانون کی خلاف ورزی کی اس کے خلاف کارروائی ہوگی، اطلاعات ہیں سابق وزیر داخلہ پنجاب عطاتارڑ نے پولیس کو زائد المعیاد آنسو گیس شیلنگ کا حکم دیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ عطا تارڑ سے یہ ہی پوچھنا تھا کہ انہوں نے حکم دیا ہے یا نہیں، عطا تارڑ نے حکم نہیں دیا تو بےشک وہ اپنے گھر آرام سے آئیں جائیں، کوئی غیر قانونی کام نہیں کرونگا جو قصوروار ہوگا کٹہرے میں کھڑا ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں