اچھی خوراک سے اب ڈپریشن کا مقابلہ ممکن ہے

آج کل لوگوں کو ذہنی صحت کے مسائل جیسے بے چینی، تناؤ کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ ایسی صورتحال میں دماغی صحت کو بہتر رکھنے کے لیے آپ کو اپنی غذا میں ایسی کونسی اشیاء کا استعمال کرنا چاہیے کہ جس سے آپ کو ذہنی تنائو سے چھٹکارا حاصل ہو جائے؟ یہ ہم آپ کو بتائیں گے.

جسمانی اور ذہنی صحت کا ایک دوسرے سے تعلق ہے۔ ویسے اگر ہم ذہنی صحت کی بات کریں تو اس پر زیادہ بات نہیں ہوتی۔ زیادہ تر لوگ دماغی صحت سے متعلق مسائل کو نہیں پہچانتے یا اس پر زیادہ توجہ نہیں دیتے۔ کورونا کے بعد سے ذہنی صحت سے متعلق مسائل مزید بڑھ گئے ہیں۔ اس وبا کے بعد سے لوگوں میں ڈپریشن، بے چینی وغیرہ کی علامات زیادہ دیکھی جا رہی ہیں۔ یہ بھی سچ ہے کہ ہماری ذہنی صحت کا انحصار اس بات پر ہے کہ ہم کیا کھاتے ہیں۔ اس لیے آج ہم آپ کو بتانے جارہے ہیں کہ دماغی صحت کے مسائل کے خطرے کو کم کرنے کے لیے آپ کو اپنی خوراک میں کن غذاؤں کو شامل کرنا چاہیے۔

دماغ کے لیے صحت بخش غذا کونسی ہے؟

پھل اور سبزیاں

دماغ کو صحت مند رکھنے کے لیے پھلوں اور سبزیوں کا استعمال کرنا چاہیے کیونکہ یہ اینٹی آکسیڈنٹس سے بھرپور ہوتے ہیں۔ لہذا، وہ آپ کی ذہنی حالت کو توازن میں رکھنے میں کارآمد ثابت ہوتے ہیں۔ آپ کو گلابی اور سرخ رنگ کے پھل اور سبزیاں زیادہ سے زیادہ استعمال کرنی چاہئیں۔ آپ اپنی خوراک میں تربوز اور ٹماٹر شامل کر سکتے ہیں۔

ہربل چائے پئیں

چائے کا استعمال دماغ کو صحت مند رکھنے کے لیے بہت فائدہ مند سمجھا جاتا ہے۔ دماغ کی پرورش کرنے والے غذائی اجزاء جڑی بوٹیوں والی چائے میں پائے جاتے ہیں۔ اسے بنانے کے لیے آپ اجوائن، دار چینی، کالی مرچ اور لونگ استعمال کر سکتے ہیں۔ اس کا استعمال دماغ کو تندرست رکھنے میں مدددیتا ہے۔

گری دار میوے

ماہرین کا خیال ہے کہ گری دار میوے کا روزانہ استعمال دماغ کو صحت مند رکھتا ہے۔ درحقیقت گری دار میوے میں ایسے غذائی اجزاء پائے جاتے ہیں جو دماغ کو صحت مند رکھنے میں مدد دیتے ہیں۔ اس کے لیے آپ کو اپنی خوراک میں اخروٹ، بادام، کشمش وغیرہ ضرور شامل کرنا چاہیے۔ اخروٹ کے استعمال سے انسان کی ذہنی نشوونما تیز ہوتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں