جرائم ثابت ہونے پر ترکیہ کی عدالت نے8 ہزار 658 سال قید کی سزا سنا دی

انقرہ: ترکیہ کی عدالت نے خود ساختہ مذہبی اسکالر کو جرائم ثابت ہونے پر 8 ہزار 658 برس قید کی سزا سنا دی۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کا کہنا ہے کہ ترکیہ میں 64 سالہ متنازع ٹی وی شخصیت ، خود ساختہ مذہبی اسکالر اور کاروباری شخص عدنان اکتار کو مختلف جرائم میں سزا سنائی گئی ہے۔ ترکیہ کی تاریخ میں پہلی مرتبہ کسی مجرم کو اتنے لمبے عرصے تک کی سزا سنائی گئی ہے۔ عدنان اکتار کو استنبول کی اعلیٰ کرمنل عدالت نے سزا سنائی ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق گذشتہ سال جنوری میں بھی عدنان اکتار کو جنسی جرائم،جنسی استحصال، فوج اورسیاستدانوں کی جاسوسی جیسے جرائم میں ایک ہزار 75 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی جس کو بعد میں کالعدم قرار دے دیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ عدنان اکتار ترکیہ سمیت دنیا بھر میں اپنی پہچان متنازع اسکالر کے طور پر رکھتے ہیں اور انہوں نے ایک ٹی وی چینل بھی بنا رکھا ہے جسے حکام کی جانب سے بند کر دیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں