’ایڈوائس صدر کے پاس چلی گئی، اب عمران خان کا امتحان ہے ‘

وزیر دفاع خواجہ آصف نے کہا ہے کہ آرمی چیف کی تعیناتی کے حوالے سے ایڈوائس صدر عارف علوی کے پاس جا چکی ہے۔

وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں آرمی چیف کے لیے لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر اور چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی کے لیے لیفٹیننٹ جنرل ساحر شمشاد مرزا کے ناموں کی منظوری دیدی گئی ہے۔وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد بتایا کہ چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی اور آرمی چیف کی سمری صدر کو ارسال کر دی گئی ہے۔

اسی حوالے سے وزیر دفاع خواجہ آصف کا سوشل میڈیا پر جاری بیان میں کہنا ہے کہ ایڈوائس صدر عارف علوی کے پاس بھیج دی گئی ہے اور اب عمران خان کا امتحان ہے کہ وہ دفاع وطن کے ادارے کو مضبوط بنانا چاہتے ہیں یا متنازع۔

انہوں نے کہا کہ صدر عارف علوی کی بھی آزمائش ہی ہے کے وہ سیاسی ایڈوائس پہ عمل کریں گے یا آئینی و قانونی ایڈوائس پر عمل کرتے ہیں۔

وفاقی وزیر خواجہ آصف نے اپنے سوشل میڈیا بیان میں مزید لکھا کہ بحیثیت افواج کے سپریم کمانڈر ادارے کو سیاسی تنازعات سے محفوظ رکھنا ان کا بھی فرض ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں