ترکیہ میں چھالیہ لے کر جانے پر پابندی عائد

اب ترکیہ میں چھالیہ لے کر جانے پر پابندی عائد ہوگی ہے۔ چھالیہ ساتھ لے جانے پر قید بھی ہوسکتی ہے۔

ترجمان سول ایوی ایشن اتھارٹی نے خبردار کر دیا ہے کہ ترکیہ جانے والے مسافر اب اپنےساتھ چھالیہ لے کر جانے سے گریز کریں ۔ ترکیہ قانون کے تحت چھالیہ منشیات کے زمرے میں آتی ہے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ چھالیہ لے کر جانا ترکیہ کے قانون کی خلاف ورزی ہو گی اور اس لیے مسافر قانون کی پیروی کریں۔

خیال رہے کہ پاکستان سے تعلق رکھنے والے محمد اویس سیاحتی ویزے پر 15 ستمبر 2022 کو ترکی گئے ، انہوں نے وہاں پر ایک ہفتہ قیامِ کرنا تھا۔ وہ اپنے ٹور آپریٹر دوست کی فرمائش پر چھالیہ کے دو پیکٹ بھی ساتھ لے کر گئے تھے جس کی بنیاد پر ترک حکام نے انہیں گرفتار کر کے جیل بھیج دیا تھا۔

ترک حکام نے چھالیہ کو کیمیکل تجزیے کے لیے لیبارٹری بھیجا تھا جس کے نتیجے میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ چھالیہ میں کسی بھی قسم کی کوئی نشہ آوور چیز موجود نہیں تھی ، جس کے بعد محمد اویس کو وہاں کی مقامی عدالت نے رہا کر دیا تھا تاہم آئندہ آنے والوں کے لئے سزا ہونے کا عندیہ بھی دے دیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں