غیر مسلموں کے طلاق سرٹیفکیٹ سے متعلق عدالت کا اہم فیصلہ

لاہور: لاہور ہائی کورٹ نے پنجاب حکومت کو غیر مسلموں کے طلاق سرٹیفکیٹ سے متعلق 90 روز میں رولز بنانے کا حکم دیدیا ۔

لاہور ہائی کورٹ نے غیرمسلم خاتون کی طلاق کے بعد والد کے نام سے شناختی کارڈ کے اجراء کی درخواست پر فیصلہ جاری کردیا ہے ، جسٹس طارق سلیم نے شمائلہ شریف نامی خاتون کی درخواست پر 7 صفحات پر مشتمل فیصلہ جاری کیا ہے ۔

درخواست گزار کا موقف تھا کہ یونین کونسل غیر مسلموں کو طلاق سرٹیفکیٹ جاری نہیں کرتی ہے ، یونین کونسل کے طلاق سرٹیفکیٹ کے بغیر نادرا شناختی کارڈ میں تبدیلی نہیں کرتا ۔

جسٹس طارق سلیم شیخ نے کہا کہ مسیحی برادری کی جانب سے یونین کونسلز کے سرٹیفکیٹ جاری نہ ہونےکی شکایات آرہی ہیں ، پنجاب لوکل گورنمنٹ ایکٹ کے تحت رولز کا اجراء ضروری ہے.

فیصلہ میں کہا گیا ہے کہ رولز بنائے جانے تک نادرا رجسٹریشن پالیسی کے تحت سہولت فراہم کرے ، عدالت نے درخواست گزارکو شناختی کارڈکےلیے دوبارہ نادراسے رجوع کرنےکی ہدایت کردی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں