مرد کا مرد سے پیار ٗ مہر بانو کو خمیازہ بھگتنا پڑ گیا

کراچی (ویب ڈیسک ) اداکارہ مہر بانو کی طرف سے عورت مارچ میں ہم جنس پرستی کی حمایت کرنے پر پاکستانی عوام کا غم و غصہ آخر کار رنگ لے آگیا ٗ مہر بانو کا انسٹاگرام اکائونٹ ڈیلیٹ کر دیا گیا ۔

تفصیلات کے مطابق اداکارہ مہر بانو نے عورت مارچ کے دوران ہم جنس پرستی کی کی حمایت کرتے ہوئے ایک متنازعہ بیان دیا تھا جس کے بعد پورے ملک میں غم غصہ کی ایک لہر دوڑ گئی تھی ٗ مہر بانو کے انسٹاگرام اکائونٹ کو بڑی تعداد میں عوام نے رپورٹ کیا جس کے بعد ان کا اکائونٹس اب ڈی ایکٹو نظر آرہا ہے ۔ ابھی تک یہ کنفرم نہیں ہوا کہ مہر بانو کا اکائونٹ انسٹاگرام انتظامیہ کی طرف سے ڈی ایکٹو کیا گیا ہے یا پھر انہوں نے خود عوام کی نفرت دیکھ کر خود کو رو پوش کر لیا ہے۔

واضح رہے کہ مہر بانو نے کراچی میں عورت مارچ کے موقع پر ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ مجھے نہیں لگتا کہ ہم جنس پرستی ایک برائی ہے ٗ نہ یہ زمانے کیلئے برا ہے۔مجھے لگتا ہے کہ عورت سے نفرت کرنا برا ہے ٗ عورتوں پر تشدد برا ہے ٗ دو مردوں کا پیار کرنا بالکل برا نہیں ہے ‘‘۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں