’’طالبان کی پرتشدد سرگرمیوں پر تشویش ہے ‘‘

کابل ( ویب ڈیسک ) افغان صدر اشرف غنی نے کہا ہے کہ طالبان کی طرف سے جاری تشدد پر شدید تشویش ہے اور اب افغان طالبان روس اور ترکی کے ساتھ مذاکرات میں حصہ لینے پر غور کررہے ہیں

ایک بیان میں افغان صدر نے کہا کہ ہفتے کے روز ہرات میں ہونے والے حملے میں طالبان م لوث ہیں۔ ، جس میں 8 افراد ہلاک اور 50 سے زیادہ زخمی ہوئے تھے ۔طالبان کی طرف سے پرتشدد رویے سے اس بات کی تصدیق ہوتی ہے کہ وہ امن کی خواہش نہیں رکھتے ٗ ملک میں پرامن حل کی کوششوں میں امن کا موجودہ موجود تھا جو کہیں کھو رہا ہے۔ طالبان کے جاری تشدد سے اس بات کی تصدیق ہوتی ہے کہ وہ ملک میں پرامن حل نہیں چاہتا اور یہ امن کے موجودہ مواقع سے محروم ہے۔

یاد رہے کہ ا مریکی سنٹرل کمانڈ کے کمانڈر، جنرل کینتھ میک کینسی نے ، افغانستان میں تشدد کے بڑھتے ہوئے واقعے پر اپنی تشویش کا اظہار کیا تھا ، جبکہ افغان طالبان کا کہنا ہے کہ وہ ماسکو اور استنبول میں امن مذاکرات میں حصہ لینے پر غور کررہے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں