ترکیہ اور پاکستان کا اعلیٰ سطحی اجلاس میں اقتصادی شراکت داری کو  مزیدمضبوط بنانے پر اتفاق

sifc cheema
کیپشن: sifc cheema
سورس: google

 ویب ڈیسک : ترکیہ کے سفیر، جناب مہمت پیکاسی  کی وفاقی وزیر برائے اقتصادی اُمور احد خان چیمہ سے  ملاقات   میں ترکیہ اور پاکستان کا اعلیٰ سطحی اجلاس میں اقتصادی شراکت داری کو  مزیدمضبوط بنانے پر اتفاق کیا گیا ۔

 ملاقات کا محور ترکیہ اور پاکستان کے درمیان دیرینہ برادرانہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے پر مرکوز تھا۔

ملاقات میں اقتصادی تعاون کو نئی بلندیوں تک پہنچانے پر  اتفاق رائے کیا گیا جبکہ وفاقی وزیر برائے اقتصادی اُمور احد خان چیمہ   نے 2022  کے پاکستان اور ترکیہ کے درمیان  ترجیحی تجارتی معاہدے (PTA) کو ایک اہم پیشرفت کے طور پر سراہا ۔

وفاقی وزیر نے   ترکیہ کے سفیر کو پاکستان میں ایس آئی ایف سی (SIFC) کے قیام سے آگاہ کیا جس کا مقصد دوست ممالک کے درمیان سرمایہ کاری کو راغب کرنا تھا۔

ملاقات کے دوران کارپوریٹ فارمنگ کے لئے پاکستان  میں ترکیہ کی سرمایہ کاری کے امکانات کو بھی اُجاگر کیا گیا جن میں زرعی مشینری  اور آلات شامل ہیں۔ 
دونوں فریقین نے دو طرفہ تجارت اور سرمایہ کاری میں  گورنمنٹ ٹو گورنمنٹ (G2G) اور بزنس ٹو بزنس (B2B) انتظامات کے ذریعے تعاون کو بڑھانے کی اہمیت پر زور دیا۔

ترکیہ کے سفیر نے   ایس آئی ایف سی (SIFC) کی اہمیت  کو سراہتے  ہوئے اعلیٰ سطحی اسٹریٹجک کوآپریشن کونسل (HLSCC) اور اسٹریٹجک اکنامک فریم ورک (SEF) کے ذریعے دو طرفہ تجارت کو وسعت دینے اور توانائی، بینکنگ، تجارت اور ریلوے کے شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے کے لیے  خواہش کا اظہار کیا۔

اعلیٰ سطحی اسٹریٹجک کوآپریشن کونسل (HLSCC) کے اگلے سیشن میں منصوبوں  پر  تبادلہ خیال کےلئے   ملاقات جلد ہی متوقع ہے، جس میں تجارت کے حجم کو 5 بلین ڈالر تک بڑھانے پر توجہ مرکوز ہو گی۔
 ملاقات کے دوران دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کے لیے پاکستان میں ترکیہ بینک کی برانچ کے قیام کے منصوبے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا

ملاقات کے اختتام پروفاقی وزیر برائے اقتصادی اُمور  نے حکومت پاکستان کے دوطرفہ تعلقات کی مکمل صلاحیتوں کا ادراک کرتے ہوئے دونوں ممالک کے باہمی فائدے کے لیے مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے کے لیے کام جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا۔