خواتین کے کام کرنیکی وجہ سے طلاق کی شرح بڑھ گئی ہے، سعید انور  بیان پر تنقید کی زد میں

خواتین کے کام کرنیکی وجہ سے طلاق کی شرح بڑھ گئی ہے، سعید انور  بیان پر تنقید کی زد میں

(ویب ڈیسک ) پاکستان کرکٹ ٹیم کےسابق کپتان سعید انور نے  کہا ہے کہ جب سے خواتین نے کام کرنا شروع کیا ہے طلاق کی شرح بڑھ گئی ہے۔ان  کے اس بیان پر سوشل میڈیا صارفین  ان پر تنقید کر رہے ہیں۔

سوشل میڈیا پر  وائرل ہونے والی ایک ویڈیو میں سعید انور کو   یہ  کہتے سنا جا سکتا ہے  کہ  پاکستان میں گزشتہ تین سالوں میں طلاقوں میں تقریباً 30 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے اسے ملک میں خواتین کے کام کرنے سے جوڑا ہے ۔ مالی آزادی کی وجہ سے خواتین نے اپنی مرضی کے مطابق اپنا گھر چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس ویڈیو کو سوشل میڈیا پر صارفین کی جانب سے کافی تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

سعید انور نے   سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں کہا، "جب سے پاکستان میں خواتین نے کام کرنا شروع کیا ہے، گزشتہ تین سالوں میں طلاق کی شرح میں 30 فیصد اضافہ ہوا ہے۔" انہوں  نے کہا کہ "بیویاں کہتی ہیں، بھاڑ میں جاؤ  ، میں خود کما سکتی ہوں۔ میں اپنے طور پر گھر چلا سکتا ہوں۔ یہ ایک مکمل گیم پلان ہے۔ آپ اس گیم پلان کو سمجھ نہیں پائیں گے جب تک کہ آپ کو رہنمائی نہ ملے۔"

سعید انور نے ویڈیو میں کہا کہ  "میں نے دنیا کا سفر کیا ہے۔ میں ابھی آسٹریلیا، یورپ سے واپس آ رہا ہوں۔ نوجوان مصائب کا شکار ہیں، خاندانوں کا برا حال ہے۔ میاں بیوی  لڑ رہے ہیں۔ حالات اس قدر خراب ہیں کہ انہیں اپنی خواتین کو پیسوں کے لیے کام کرنے پر مجبور کرنا پڑتا ہے۔"

سابق کپتان نے انکشاف کیا کہ  نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن اور ایک آسٹریلوی میئر نے بھی ان کے سامنے ایسے ہی خدشات کا اظہار کیا تھا۔

سعید انور نے ویڈیو میں کہا کہ"نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے مجھے یہ پوچھنے کے لیے فون کیا، 'ہمارا معاشرہ کیسے بہتر ہوگا؟'. آسٹریلوی میئر نے مجھ سے کہا، 'جب سے ہماری خواتین کام کرنے لگیں ہیں ، ہمارا کلچر تباہ ہو گیا ہے۔"

اس حوالے سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے ان پر کافی تنقید کی جا رہی ہے۔