اس وقت 47 والی حکومت ہے اگر یہ چلتی رہی حالات خراب ہونگے،  عارف علوی

اس وقت 47 والی حکومت ہے اگر یہ چلتی رہی حالات خراب ہونگے،  عارف علوی

(ویب ڈیسک ) سابق صدر ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ اس وقت 47 والی حکومت ہے اگر یہ چلتی رہی حالات خراب ہونگے، بانی پی ٹی آئی اس وقت اتنا مینڈیٹ لینے کے بات قید میں ہے۔

سابق صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی   کا کہنا ہے کہ  میڈیا آزاد ہے تو لوگوں کو پتہ چل رہا دنیا میں کیاہو رہا ہے ۔ غزہ میں سوشل میڈیا پر تصویروں سے پتہ چلا کتنا ظلم ہو رہا ہے ۔میڈیا کی آزادی پاکستان کے اہم ہے، پاکستان واحد ملک ہے جس میں سوشل میڈیا کو بند کیا گیا ہے۔ سوشل میڈیا عوام کے ہاتھ میں ہے جس سے افواہیں پھیلتی ہے ۔

عارف علوی  نے کہا  کہ جمعرات کو بانی پی ٹی آئی سے ملاقات ہوئی ان کو اچھی صحت اور اچھے موڈ میں پایا، مسائل کا حل بات چیت ہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے تمام ادارے اس بند گلی میں چلے گئے ہیں ، فوج میری ہیں میں نے پیشہ اس کو ڈفینڈکیا ۔ میں برج کا کردار ادا کرتا رہا ہوں، میں بات چیت کے لیے کوشش کرتا رہوں گا۔ ناکامی تب ہو گی جب ناکامی مان لونگا ۔

ان کا کہنا تھا کہ  سعودی عرب سے جو وفد آیا اس سے فائدہ ہو گا ، پاکستان کو اس وقت انویسٹمنٹ کی ضرورت ہے۔

سابق صدر نے کہا کہ  بانی پی ٹی آئی اس وقت اتنا مینڈیٹ لینے کے  بعد بھی  قید میں ہے ۔اس وقت 47 والی حکومت ہے اگر یہ چلتی رہی حالات خراب ہونگے ۔

عارف علوی نے کہا کہ  پنجاب میں ہر کسی کے گھر جا کر پولیس نے توڑپھوڑ کی ۔ جب اچھی حکومت آئے گی تو پولیس کو لگام دینا کتنا مشکل ہوگا ۔