ہمیشہ ساتھ رہنے کی خواہش،دوست نے دوست کو نامرد بنادیا

ہمیشہ ساتھ رہنے کی خواہش،دوست نے دوست کو نامرد بنادیا
کیپشن: ہمیشہ ساتھ رہنے کی خواہش،دوست نے دوست کو نامرد بنادیا

ویب ڈیسک : (جواد ملک )  دوست کو ہمیشہ کے لئے اپنا بنانے کی خواہش،   ڈاکٹروں کی ملی بھگت سے بے ہوش کر کے مردانہ خصوصیات سے محروم کردیا۔

 رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست اتر پردیش کے علاقے مظفر نگر میں ایک 20 سالہ نوجوان مجاہد کو اس کے دیرینہ دوست اوم پرکاش نے دھوکے سے اسپتال بلا کر آپریشن کے ذریعے مردانہ اعضا نکلوادئیے۔

 مجاہد کا کہنا ہے کہ اوم پرکاش نے ڈاکٹروں سےملی بھگت کرکے  اس کی مرضی کے بغیر تبدیلی جنس کا آپریشن کرا دیا ہے کیونکہ وہ اس سے شادی کرنا چاہتا تھا۔

 مجاہد نے یہ بھی الزام لگایا کہ اوم پرکاش دوسال سے ڈرا دھمکا کر  اسے زیادتی کا نشانہ بنا رہا ہے ۔ اوم پرکاش  3 جون کو مجاہد کو  منصور پور میں واقع بیگ راج پور میڈیکل کالج میں لے گیا جہاں ڈاکٹرز نے اسے بے ہوش کردیا اگلے دن جب اسے ہوش آیا تو وہ مردانہ خصوصیات سے محروم ہوچکا تھا ڈاکٹرز نے اسے بتایا کہ پہلے وہ لڑکا تھا اب وہ ایک لڑکی بن چکا ہے ۔

جبکہ اوم پرکاش نے اسے کہا کہ اب تم ہمیشہ کے لئے میرے ہو ہم لکھنو چلیں گے جہاں جا کر میں تم سے شادی کرلوں گا۔ مجاہد کے مطابق اس نے مزاحمت یا شور مچانے پر مجاہد کے باپ کو قتل کرنے کی دھمکی دی تھی۔

دوسری طرف بیگ راج پورمیڈیکل کالج کے ڈاکٹرز نے مجاہد کے بیان کی تردیدکرتے ہوئے کہا ہےکہ تبدیلی جنس کا آپریشن مجاہد کی اپنی خواہش پر کیا گیا ۔

 مجاہد کے باپ کی درخواست پرپولیس نے اوم پرکاش کو گرفتار کرکے تفتیش شروع کردی ہے  بھارتیہ کسان یونین نے میڈیکل کالج کے باہر احتجاج کیا ہے اور الزام لگایا ہے کہ اسپتال اور میڈیکل کالج کے ڈاکٹرز اعضا کی خریدوفروخت میں ملوث ہیں ۔ بھارتیہ کسان یونین کے رہنما شیام پال نے مطالبہ کیا ہے کہ مجاہد کو زر تلافی کے طور پر بھارتی حکومت دو کروڑ روپے ادا کرے۔

Watch Live Public News

کونٹینٹ پروڈیوسر