کسی کے ساتھ سختی سے پیش نہیں آنا چاہتی، ایسا کرنے سے دل پر بوجھ ہوتا ہے، مریم نوازشریف

کسی کے ساتھ سختی سے پیش نہیں آنا چاہتی، ایسا کرنے سے دل پر بوجھ ہوتا ہے، مریم نوازشریف
کیپشن: Maryam Nawaz Sharif does not want to be harsh with anyone, doing so burdens the heart

ویب ڈیسک: (نتاشارحمان) وزیراعلی پنجاب مریم نوازشریف کی زیر صدارت خصوصی اجلاس منعقد ہوا۔ جس میں صوبے بھر میں عید الاضحی اور دیگر انتظامی امور کے حوالے سے مجموعی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا۔ اس دوران انہوں نے کہا کہ کسی کے ساتھ سختی سے پیش نہیں آنا چاہتی کیونکہ ایسا کرنے سے دل پر بوجھ ہوتا ہے۔ 

وزیر اعلیٰ مریم نوازشریف نے عید پر عمدہ کارکردگی پر ڈپٹی کمشنرز اور ان کی ٹیموں کو سراہا۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ دل سے اپنی پوری ٹیم سے خوش ہوں اور دل سے شاباش دیتی ہوں۔ اسی جوش و جذبے سے عوام کی خدمت کا سفر جاری رہنا چاہیے۔ کمشنرز، ڈپٹی کمشنرز اور اے سی ہفتے میں ایک دن عوام کے لئے مخصوص کریں۔ 

وزیراعلیٰ پنجاب نے مزید کہا کہ ہسپتالوں اور سکولوں کے باقاعدگی سے وزٹ کریں، بلڈنگ، بجلی وائرنگ اور دیگر امور کے بارے میں رپورٹ لی جائے۔ ہر ڈسٹرکٹ میں عید کی طرح مانیٹرنگ کے لئے مستقل کنٹرول روم ہونا چاہیے۔ 

وزیر اعلیٰ مریم نوازشریف نے صوبائی وزیر اطلاعات عظمیٰ زاہد بخاری، صوبائی وزیر بلدیات ذیشان رفیق کی کارکردگی کو بھی سراہا۔ وزیر اعلیٰ مریم نوازشریف نے انچارج سی ایم کمپلینٹ سیل شعیب مرزا اور معاون خصوصی ذیشان ملک کو بھی شاباش دی۔

مریم نواز شریف نے مزید کہا کہ میڈیا، عوامی نمائندوں اور عوام کی طرف سے عید کی صفائی پر مثبت ردعمل کا مظاہرہ کیا گیا۔ قائد محمد نوازشریف نے خود وزٹ کرکے انتظامات کا جائزہ لیا اور سراہا۔ وزیراعظم محمد شہباز شریف کی تعریف ہمارے لئے اعزازکے مترادف ہے۔ عید پرصفائی کا جو معیار قائم کیا گیا اسے ہر صورت قائم رکھنا ہوگا۔ 

وزیراعلیٰ کا مزید کہنا تھا کہ شہروں، قصبات اور دیہات میں صفائی کے انتظامات صرف تسلی بخش ہی نہیں بلکہ بہترین تھے۔ آلائشیں اٹھانے کے بعد پہلی مرتبہ سڑکیں دھوکر سپرے کیا گیا اور عرق گلاب ملا پانی سے چھڑکاؤ کیا گیا۔ انتظامیہ اور اہلکاروں نے اپنے فرائض تندہی سے سرانجام دیے اور ڈیوٹی کے ساتھ پورا انصاف کیا۔ بسوں کے کرایہ کم کرانے کے لئے ڈپٹی کمشنرز اور ان کی ٹیم نے خوب کام کیا۔ 

انہوں نے کہا کہ فیول پرائس کم ہونے پر کرایوں میں کمی کا ریلیف عوام کو ملنا چاہیے تھا۔ محرم الحرام، فلڈ اورممکنہ بارشوں کے پیش نظرپیشگی انتظامات کیے جائیں۔ عام آدمی کو بنیادی اشیاء خوردونوش کی سستے داموں فراہمی کے لئے پائیدار میکانزم بنایا جائے۔ 

ان کا مزید کہنا تھا کہ ایک وزیر اعلیٰ نے حسرت سے کہا کہ کاش ہماری بیوروکریسی اور ایڈمنسٹریشن پنجاب کی طرح ہوجائے۔ کسی کے ساتھ سختی سے پیش نہیں آنا چاہتی،سختی کروں تو دل پر بوجھ ہوتا ہے۔ عوام کے حقوق کے سلسلے میں اللہ تعالیٰ اور قوم کو جوابدہ ہوں۔ عوام کا مفاد اور سہولت ہر امر پر مقدم ہے۔ 

Watch Live Public News