عید سےقبل قربانی کے جانوروں کیلئےمساج پارلر قائم

عید سےقبل قربانی کے جانوروں کیلئےمساج پارلر قائم
کیپشن: قربانی کے جانوروں کیلئےمساج پارلر قائم

ویب ڈیسک: قربانی کے قریب آتے ہی جہاں گلی محلوں میں رونق بڑھ جاتی ہے، وہیں شہری قربانی کے جانور کی دیکھ بھال میں بھی کوئی کسر نہیں چھوڑتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق حال ہی میں ایک خبر نے سب کی توجہ حاصل کر لی ہے، جہاں قربانی کے جانوروں کا مساج پارلر سامنے آیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق انڈونیشیا کے دارالحکومت جکارتہ میں عید الاضحیٰ سے قبل شہریوں کی جانب سے اپنے جانوروں کو بھی خوب پر سکون ماحول فراہم کیا جا رہا ہے اور خدمت کی جا رہی ہے۔

45 سالہ سماروان مساج پارلر میں جانوروں کو مساج بھی دیتے ہیں۔ جبکہ اے ایف پی کو دیے گئے انٹرویو میں بتایا کہ انہیں خوبصورت بھی بناتے ہیں، وہ کہتے ہیں کہ اس عمل سے قربانی کے جانوروں کو اچھا محسوس ہوتا ہے۔

گائے کے سیلون کے طور مقبول ہونے والے پارلر پر کام کرنے والے سماروان جب قربانی کے جانوروں کا مساج کرتے ہیں تو ان سے کچھ اس طرح بات چیت کرتے ہیں جو کہ عام انسان کو سماروان کے پاگل ہونے کا گمان ہوتا ہے۔

تاہم جانوروں سے ان کی محبت اور پیار کی زبان خود قربانی کے جانوروں کو بھی سمجھ آ ہی جاتی ہے۔ اپنے دعوے میں سماروان کا کہنا تھا کہ جب میں اپنے ہاتھوں سے جانوروں کے جسم پر مالش کرتا ہوں تو انہیں اچھا لگتا ہے کیونکہ یہ سب میں پیار سے کرتا ہوں۔

جبکہ ساتھ ہی کہا کہ اگر کوئی شخص یہ کام کرے گا تو جانور اس سے بدک جائے گا، کیونکہ انہیں محسوس ہوتا ہے کہ انہیں تکلیف پہنچائی جا رہی ہے۔

سماروان کا پارلر جانوروں کی منڈی کے قریب ہی ہے، یہی وجہ ہے کہ ان کا کاروبار بھی اچھا چل رہا ہے، تاہم ٹرک اور ٹرالوں کی شور و غل کے باعث جانور پریشان ضرور ہو جاتے ہیں۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق جکارتہ شہر میں جانوروں کے پارلرز کی مارکیٹ میں اضافہ ہوا ہے، جبکہ شہریوں کی جانب سے جانوروں کو خاص طور پر تیار کرانے لایا جاتا ہے

Watch Live Public News