'سابق حکومت نے اپنے سیاسی مقاصد کیلئے معاشی اور بارودی سرنگیں بچھائیں'

'سابق حکومت نے اپنے سیاسی مقاصد کیلئے معاشی اور بارودی سرنگیں بچھائیں'
اسلام آباد: وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ سابق حکومت نے آئی ایم ایف کے ساتھ کمزور بنیادوں اور سخت شرائط پر معاہدہ کیا، سابق حکومت نے اپنے سیاسی مقاصد کے لئے معاشی اور بارودی سرنگیں بچھائیں. وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ کابینہ کے اجلاس میں ملک بھر میں سیلاب کی صورتحال پر غورہوا، کابینہ نے این ڈی ایم اے، پی ڈی ایم اے اور صوبائی حکومتوں کو متحرک رہنے کی ہدایت بھی کی نیز سیلاب کی صورتحال میں افواج پاکستان، پولیس، پی ڈی ایم اے، این ڈی ایم اے سمیت تمام اداروں کی کاوشوں کو بھی سراہا گیا. کابینہ نے تمام امدادی اداروں کو فیلڈ میں متحرک رہنے اور لوگوں کے جان و مال کو تحفظ فراہم کرنے کی ہدایت بھی کی۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہ کابینہ نے سیلاب کے باعث جاں بحق ہونے والے افراد کے ایصال ثواب کے لئے دعا کی اور ہدایت کی کہ ان کے لواحقین کو ریلیف این ڈی ایم اے، پی ڈی ایم اے اور صوبائی حکومتوں کے سروے کے بعد جلد از جلد فراہم کیا جائے۔ وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا ہے کہ عالمی منڈی میں ایندھن کی قیمتوں میں کمی کے اعلان کے بعد وزیراعظم نے پٹرول کی قیمت میں 18.50 روپے، ڈیزل میں 40.54 روپے، کیروسین آئل میں 33.81 روپے اور لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت میں 34.71 روپے کمی کا اعلان کیا ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ایندھن کی قیمتوں میں کمی اسی وعدے کا تسلسل ہے جو وزیراعظم شہباز شریف نے عوام سے کیا وفاقی وزیر اطلاعات نے کابینہ میں ایندھن کی قیمتوں میں کمی کے اعلان کے بعد پبلک ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں کمی کے لئے مکمل مانیٹرنگ کی ہدایت جاری کی ہے تاکہ اس کمی کا پورا فائدہ عوام کو مل سکے،انہوں نے کہا کہ جس طرح ہم نے مشکل فیصلے کئے ہیں اور اب عالمی منڈی میں کمی آئی ہے تو اس کا فائدہ عوام کو منتقل ہونا چاہئے۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہ سابق حکومت نے آئی ایم ایف کے ساتھ کمزور بنیادوں اور سخت شرائط پر معاہدہ کیا، سابق حکومت نے اپنے سیاسی مقاصد کے لئے معاشی اور بارودی سرنگیں بچھائیں انہوں نے آئی ایم ایف معاہدے کی خلاف ورزی کی،اور جب انہیں معلوم ہوا کہ ان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کامیاب ہونے جا رہی ہے تو انہوں نے اس معاہدے کی خلاف ورزیاں کیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے اس معاہدے کو بحال کیا، اس کے ساتھ ساتھ حکومت نے ایسا بجٹ پیش کیا جس میں عام آدمی کو ریلیف مل رہا ہے،موجودہ بجٹ ایسا بجٹ ہے جو ملک کو خودمختاری کی طرف لے جا رہا ہے۔ وزیراعظم شہباز شریف نے کابینہ ممبران کو آئی ایم ایف کے ساتھ کامیاب معاہدہ ہونے پر مبارکباد دی اور وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اور ان کی ٹیم کی کاوشوں کو سراہا، وزیراعظم نے وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری اور ان کی ٹیم کو بھی اس سلسلے میں مکمل معاونت فراہم کرنے پر مبارکباد دی۔ مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کو یقین ہے کہ ملک اس معاشی بحران سے تب نکل سکتا ہے جب ملک کی معیشت مستحکم ہوگی اور ملک معاشی خودمختاری کی طرف تب جائے گا جب ہم اپنے پیروں پر خود کھڑے ہوں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ 2015ء میں نواز شریف کی قیادت میں حکومت نے آئی ایم ایف پروگرام مکمل کیا تھا.
ایڈیٹر

احمد علی کیف نے یونیورسٹی آف لاہور سے ایم فل کی ڈگری حاصل کر رکھی ہے۔ پبلک نیوز کا حصہ بننے سے قبل 24 نیوز اور سٹی 42 کا بطور ویب کانٹینٹ ٹیم لیڈ حصہ رہ چکے ہیں۔