ٹیکساس شوٹنگ: 19 بچوں کے قاتل کی چیٹ وائرل

ٹیکساس شوٹنگ: 19 بچوں کے قاتل کی چیٹ وائرل
ٹیکساس ایلیمنٹری اسکول شوٹنگ: اسکول میں فائرنگ کے بعد ہلاک ہونے والوں کے بارے میں زیادہ معلومات فراہم نہیں کی گئیں۔ تاہم سکول کی ویب سائٹ کے مطابق ہلاک ہونے والے طلباء کی عمریں 5 سے 11 سال کے درمیان ہیں اور وہ دوسری، تیسری اور چوتھی جماعت میں پڑھ رہے تھے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ حملہ آور نے اکیلے ہی اندھا دھند فائرنگ کی جو بعد میں پولیس کی فائرنگ میں مارا گیا۔ امریکا میں ٹیکساس کے ایک پرائمری اسکول میں 18 سالہ مسلح شخص نے فائرنگ کا واقعہ پیش کیا جس میں 19 بچوں سمیت 21 افراد ہلاک ہوگئے۔ فائرنگ سے کئی دیگر افراد زخمی بھی ہوئے۔ صدر جو بائیڈن نے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اب ملک میں اسلحے کی فروخت پر نئی پابندیاں عائد کرنے کے لیے اقدامات کرنا ہوں گے۔ اس دوران حملہ آور کی کئی چیٹس وائرل ہوئی ہیں جس میں وہ ایک خاتون کے ساتھ اپنی سازش کا انکشاف کر رہا ہے. فائرنگ سے پہلے چیٹ وائرل اسکول میں شوٹنگ سے پہلے شوٹر نے لاس اینجلس میں رہنے والی ایک خاتون کو ٹیکسٹ کیا اور کہا، 'میں اب یہ کرنے جا رہا ہوں۔' قاتل نے یہ پیغام فائرنگ کے واقعے سے چند گھنٹے قبل دیا تھا۔ حملہ آور کی شناخت سلواڈور راموس کے نام سے ہوئی ہے۔ معلومات کے مطابق اس نے بچوں کو مارنے سے پہلے اپنی دادی کو قتل کیا اور پھر بندوق لے کر اسکول روانہ ہوگیا۔ نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق حملہ آور فاسٹ فوڈ چین وینڈیز میں بطور منیجر کام کر چکا تھا اور ایک ماہ قبل ہی سبکدوش ہو گیا تھا۔ ایک انسٹاگرام اکاؤنٹ کے ملزم سے منسلک ہونے کا دعویٰ کیا جا رہا ہے جسے اس واقعے کے بعد معطل کر دیا گیا ہے۔ حملہ آور نے اس اکاؤنٹ پر اپنی سیلفی اور بندوق کی تصویر بھی شیئر کی ہے۔ راموس کی ایک سیلفی اس انسٹاگرام اکاؤنٹ سے پوسٹ کی گئی ہے۔ اس کے ساتھ آتشیں اسلحے کے میگزین کی تصویر بھی شیئر کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ اس اکاؤنٹ سے دو رائفلوں کی تصاویر بھی شیئر کی گئی ہیں۔ اسی انسٹاگرام اکاؤنٹ کی چیٹ بھی وائرل ہو رہی ہے جس میں راموس نے خاتون کو میسج کیا ہے کہ 'تم میری بندوق کی تصویر دوبارہ پوسٹ کرو گی۔' اس کے بعد 13 مئی کو جواب دیتے ہوئے لڑکی نے لکھا کہ مجھے تمہاری بندوقوں سے کیا لینا دینا۔ پھر راموس نے کہا 'بس آپ کو ٹیگ کرنا چاہتا تھا۔' اس کے بعد منگل کو وائرل چیٹ میں راموس نے لڑکی کو میسج کیا، 'میں یہ کرنے جا رہا ہوں۔' اس پر لڑکی نے پوچھا- کیا کرنے جا رہے ہو؟ حملہ آور نے جواب دیا، 'میں آپ کو 11 بجے سے پہلے بتا دوں گا۔' راموس نے پھر لکھا کہ میں ایک گھنٹے بعد میسج کروں گا، لیکن آپ کو جواب دینا ہوگا، میرے پاس ایک چھوٹا سا راز ہے۔ اس کے بعد کوئی پیغام نہیں آیا۔ فائرنگ کے واقعے کے بعد پولیس نے حملہ آور کو ہلاک کر دیا۔
ایڈیٹر

احمد علی کیف نے یونیورسٹی آف لاہور سے ایم فل کی ڈگری حاصل کر رکھی ہے۔ پبلک نیوز کا حصہ بننے سے قبل 24 نیوز اور سٹی 42 کا بطور ویب کانٹینٹ ٹیم لیڈ حصہ رہ چکے ہیں۔