رکن اسمبلی بلال یاسین پر حملہ کرنے والے کون تھے؟

رکن اسمبلی بلال یاسین پر حملہ کرنے والے کون تھے؟

لاہور: بلال یاسین حملہ کیس میں اہم پیشرفت ہوگئی اور پولیس کا کہنا ہے کہ حملہ آور اجرتی قاتل تھے۔

پولیس ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ مسلم لیگ(ن) کے رکن پنجاب اسمبلی بلال یاسین پرحملہ کرنے والے اجرتی قاتل تھے، تاہم حملہ کس نے اورکیوں کروایا اس حوالے سے تفتیش جاری ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق تفتیشی ٹیموں نے لاہور کے ٹاپ شوٹرز کی فہرستیں مرتب کر لی ہیں اوران کی گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ تفتیشی ٹیمیں تاحال سراغ نہیں لگا سکیں ہیں کہ حملہ کس نے اورکیوں کرایا۔

علاوہ ازیں بلال یاسین نے حملہ آوروں کےخلاف اندراج مقدمہ کےلیے پولیس کو درخواست دیدی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سابق کونسلر میاں اکرم کو ملنے موہنی روڈ آیا تھا، ان کے گھر کے باہر بغیر نمبر پلیٹ موٹر سائیکل پر دو حملہ آور آئے، جنہوں نے جینز کی پینٹ اور جیکٹس پہن رکھیں تھیں، انہوں نے موٹر سائیکل سے اتر کر جان سے مارنے کےلیے فائرنگ کردی، ایک فائر پیٹ اور دوسرا بائیں ٹانگ پر لگا تو میں گرگیا۔

لیگی ایم پی اے بلال یاسین کا کہنا تھا کہ کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ اس طرح حملہ ہوگا، کبھی کسی کو کوئی نقصان نہیں پہنچایا، میری کسی سے کوئی دشمنی نہیں، حملہ آوروں کو پولیس والاسمجھ رہا تھا۔

ایڈیٹر

احمد علی کیف نے یونیورسٹی آف لاہور سے ایم فل کی ڈگری حاصل کر رکھی ہے۔ پبلک نیوز کا حصہ بننے سے قبل 24 نیوز اور سٹی 42 کا بطور ویب کانٹینٹ ٹیم لیڈ حصہ رہ چکے ہیں۔