نگران پنجاب حکومت کا سوشل سکیورٹی ہسپتالوں میں گھریلو ملازمین،عوام کے مفت علاج کا فیصلہ

نگران پنجاب حکومت کا سوشل سکیورٹی ہسپتالوں میں گھریلو ملازمین،عوام کے مفت علاج کا فیصلہ
لاہور: نگران پنجاب حکومت نے سوشل سیکورٹی ہسپتالوں کی ایمرجنسی میں عوام کے مفت علاج کی منظوری دے دی ہے جبکہ گھریلو ملازمین کے سوشل سیکورٹی ہسپتالوں میں مفت علاج کا اصولی فیصلہ کیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق نگران وزیراعلیٰ پنجاب محسن نقوی کی زیر صدارت اجلاس ہوا،جس میں سوشل سیکورٹی ہسپتالوں کی ایمرجنسی میں عوام کے مفت علاج کی منظوری دے دی گئی ہے جبکہ گھریلو ملازمین کےبھی سوشل سیکورٹی ہسپتالوں میں مفت علاج کا اصولی فیصلہ کیا گیا ہے۔ سوشل سیکورٹی ہسپتالوں میں گھریلو ملازمین کے علاج کے اخراجات حکومت پنجاب ادا کرے گی، گھریلو ملازمین ہیلتھ کارڈ پر بھی علاج کرا سکیں گے، ہیلتھ کارڈ کی حد سے زیادہ اخراجات کی صورت میں ادائیگی حکومت پنجاب کرے گی۔ اجلاس میں گھریلو ملازمین کے علاج کو یقینی بنانے کے لئے پنجاب ایمپلائز سوشل سکیورٹی انسٹی ٹیوشن کو 200 ملین روپے کی گرانٹ دینے کا فیصلہ کیا گیا ۔نگران وزیر اعلی محسن نقوی کی ہدایت پر سوشل سیکورٹی ہسپتالوں کے مریضوں کو ڈیجیٹل کارڈ جاری کئے جائیں گے۔ صوبائی وزراء ڈاکٹر جاوید اکرم،عامر میر، منصور قادر،سیکرٹریز صحت، خزانہ، لیبر، اطلاعات، کمشنر پیسی اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی ۔ صوبائی وزیر پرائمری اینڈسیکنڈری ہیلتھ کیئر ڈاکٹر جمال ناصر نے ویڈیولنک کے ذریعے شرکت کی ۔

Watch Live Public News

ایڈیٹر

احمد علی کیف نے یونیورسٹی آف لاہور سے ایم فل کی ڈگری حاصل کر رکھی ہے۔ پبلک نیوز کا حصہ بننے سے قبل 24 نیوز اور سٹی 42 کا بطور ویب کانٹینٹ ٹیم لیڈ حصہ رہ چکے ہیں۔