بجٹ 2024-25: سیلز اور انکم ٹیکس چھوٹ مرحلہ وار ختم کرنے کی تجویز

بجٹ 2024-25: سیلز اور انکم ٹیکس چھوٹ مرحلہ وار ختم کرنے کی تجویز
کیپشن: Budget 2024-25: Proposal to phase out sales and income tax exemptions

ویب ڈیسک: بجٹ 25- 2024 کی تیاریاں جاری ہیں، آئندہ بجٹ میں سیلز ٹیکس اور انکم ٹیکس کی رعایتیں اور چھوٹ مرحلہ وار ختم کرنے کی تجویز پیش کر دی گئی۔

ایف بی آر کے ذرائع کے مطابق آئندہ بجٹ میں امپورٹڈ ٹریکٹرز پر ٹیکس عائد کرنے کی تجویز ہے جبکہ کمرشل امپورٹرز پر ودہولڈنگ ٹیکس لگانےپر غور کیا جارہا ہے اور کمرشل امپورٹرز پر 1 فیصد ٹیکس لگانے سےسالانہ 25 ارب روپے تک ریونیو متوقع ہے۔

ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ بجٹ میں ٹریکٹرز، کیڑے مار ادویات پر ٹیکس چھوٹ ختم کیے جانے کا امکان ہے، ٹیکس چھوٹ ختم ہونے سے آئندہ مالی سال 30ارب روپے کا ٹیکس ریونیو متوقع ہے، ٹریکٹرز اور کیڑے مارادویات پر ٹیکس استثنی ٰ کے خاتمے سے زرعی لاگت مزیدبڑھ جائے گی۔

دوسری جانب آئی ایم ایف نے پاکستان کو اربوں روپے کی ٹیکس چھوٹ بتدریج ختم کرنے کی ہدایت کی ہے، علاوہ ازیں آئندہ بجٹ میں بجلی اور گیس کے بلوں میں دی جانے والی سبسڈی کو بھی ختم کیا جارہاہے۔