گیری کرسٹن 19 مئی کو پاکستان ٹیم میں شمولیت اختیار کرلیں گے

گیری کرسٹن 19 مئی کو پاکستان ٹیم میں شمولیت اختیار کرلیں گے
کیپشن: Gary Kirsten(گیری کرسٹن)
سورس: publicnews

(پبلک نیوز) محمد شکیل خان: سپورٹ اسٹاف میں  فیلڈنگ کوچ سائمن ہیلمٹ  اور مینٹل پرفامنس کوچ ڈیوڈ ریڈ  19 مئی کو پاکستان ٹیم میں کی شمولیت اختیار کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ نے آج اعلان کیا ہے  کہ گیری کرسٹن پاکستان ٹیم کے وائٹ بال  ہیڈ کوچ کے طور پر اپنی دو سالہ  مدت کا آغاز کرنے کے لیے 19 مئی کو لیڈز میں پاکستان ٹیم میں شمولیت اختیار کرلیں گے۔

گیری کرسٹن  22 مئی کو ہیڈنگلے میں انگلینڈ کے خلاف چار میچوں کی ٹی ٹوئنٹی سیریز کے آغاز سے تین دن قبل ٹیم میں شامل ہونگے۔ اس سیریز کے بعد پاکستان کرکٹ ٹیم امریکہ اور ویسٹ انڈیز میں منعقدہ آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2024 میں حصہ لے گی جس میں پاکستان ٹیم 6 جون کو ڈیلاس میں اپنے افتتاحی میچ میں میزبان امریکہ کا مقابلہ کرے گی۔

جنوبی افریقہ سے تعلق رکھنے والے 56 سالہ گیری کرسٹن  کو گزشتہ ماہ وائٹ بال کا ہیڈ کو چ مقرر کیا گیا تھا جبکہ آسٹریلیا کے جیسن گلیسپی کی تقرری ریڈ بال کے ہیڈ کوچ کی حیثیت سے کی گئی تھی۔

جیسن گلیسپی  اگست میں بنگلہ دیش کے خلاف آئی سی سی ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کی سیریز سے قبل جولائی میں  پاکستان پہنچ کر ذمہ داری سنبھالیں گے۔

اگلے ماہ ہونے والے آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2024 اور دیگر دو طرفہ وائٹ بال سیریز کے علاوہ گیری کرسٹن پاکستان میں آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی 2025، بھارت اور سری لنکا میں ہونے والے آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی  ورلڈ کپ 2026 اور اے سی سی ٹی ٹوئنٹی ایشیا کپ 2025میں بھی پاکستان ٹیم  کے ہیڈ کوچ ہوں گے

گیری کرسٹن کا کہنا ہے  میں پاکستان کی مینز کرکٹ ٹیم کے ساتھ اس نئے سفر کا آغاز کرنے کے لیے  پرجوش ہوں۔ ایسی باصلاحیت اور متحرک ٹیم کی کوچنگ کرنا اعزاز کی بات ہے اور میں بین الاقوامی سطح پر ان کی کامیابی میں اپنا کردار ادا کرنے کے لیے بے چین ہوں۔

انہوں نے کہا  یہ پاکستان کرکٹ کے لیے واقعی سنسنی خیز لمحات ہیں، ایک نئی انتظامیہ اور کھلاڑی  ٹھوس نتائج دینے کے لیے پرعزم ہیں۔ آنے والا آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2024 ہمارے لیے اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرنے اور کرکٹ میں ایک مضبوط قوت کے طور پر پاکستان کی پوزیشن کو برقرار رکھنے کا ایک شاندار موقع پیش کررہا ہے تاہم کامیابی کے لیے اجتماعی کوشش، منصوبہ بندی اور ایک دوسرے کے لیے غیر متزلزل تعاون کی ضرورت ہوگی۔ 19 دیگر ٹیمیں ٹائٹل کے لیے کوشاں ہیں، ہمیں اپنی امنگوں کو پورا کرنے کے لیے اپنے حریفوں کو مستقل مزاجی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پیچھے چھوڑنا چاہیے۔ میں ٹیم کے ساتھ مل کر ان کے کھیل کو بلند کرنے اور دنیا بھر کے شائقین کے لیے خوشی لانے کے لیے پرعزم ہوں۔

تسلسل اور مستقل مزاجی میرے لیے اہم ہے۔ میں کھلاڑیوں کو سپورٹ کرنے اور انہیں وہ اعتماد فراہم کرنے پر یقین رکھتا ہوں جس کی انہیں بہترین کارکردگی کے لیے ضرورت ہے۔ یقین رکھیں ایک بار جب میں نے کسی کھلاڑی کو سپورٹ کرنے کا فیصلہ کر لیا تو میں  ان کے ساتھ کھڑا رہوں گا ایک ایسے ماحول کو فروغ دینے کے لیے کہ جس میں وہ آگے بڑھ سکیں۔"

دریں اثنا، پی سی بی نے ٹیم انتظامیہ کی تجویز پر سائمن ہیلمٹ (فیلڈنگ کوچ) اور ڈیوڈ ریڈ (مینٹل پرفارمنس کوچ) کو پلیئر سپورٹ اسٹاف میں شامل کرلیا ہے۔

ریڈ 20 مئی کو ٹیم میں شامل ہوں گے اور آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2024 تک ذمہ داری نبھائیں  گے جبکہ ہیلمٹ 31 مئی کو ٹیم میں شمولیت اختیار کریں گے۔ آفتاب خان جو اس وقت ٹیم کے فیلڈنگ کوچ کے طور پر خدمات انجام دے رہے ہیں، ہیلمٹ کی آمد کے بعد آئی سی سی مینز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لیے ہائی پرفارمنس کوچ کی ذمہ داریاں سنبھالیں گے۔

اسپورٹس رپورٹر

 محمد شکیل خان ایک نوجوان اسپورٹس رپورٹر ہیں جو نہ صرف فیلڈ میں متحرک ہیں بلکہ دنیا بھر میں ہونے والے اسپورٹس ایونٹس اور خصوصا کرکٹ کے حوالے سے اپنے قارئین کو باخبر رکھا اپنا اولین فرض سمجھتے ہیں۔