کابل میں لاپتہ چار پاکستانی طلبہ کی بحفاظت یونیورسٹی واپسی

کابل میں لاپتہ چار پاکستانی طلبہ کی بحفاظت یونیورسٹی واپسی
افغانستان کے دارالحکومت کابل میں عید کے دن سے لاپتہ چار پاکستانی طلبہ کی بحفاظت یونیورسٹی واپسی ہوگئی۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر برائے سمندر پار پاکستانیز ساجد حسین طوری سے کابل میں لاپتہ چار پاکستانی طلبہ کے والدین سے رابطہ کیا گیا۔ والدین نے بتایا کہ انکا کابل میں اپنے بچوں سے رابطہ ہوا جو بحفاظت یونیورسٹی پہنچ گئے ہیں۔ ساجد طوری کے مطابق چار پاکستانی طلبہ عید کے دن سے لاپتا تھے جو کل رات واپس اپنی یونیورسٹیوں میں پہنچ گئے ہیں۔ انہوں نے تعاون کرنے پر تمام متعلقہ حکام کا شکریہ ادا کیا ،طلباء کی بازیابی میں پاکستانی وزارت خارجہ کی کوششیں قابل تحسین ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری کی قیادت میں عوام کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی کوششیں جاری رکھیں گے۔ لاپتہ طلباء کے والدین نے کہا کہ وفاقی وزیر ساجد حسین طوری کا معاملہ افغان حکام و دیگر کے ساتھ اٹھانے پر شکریہ ادا کرتے ہیں،ان کی انتھک کوششوں سے بچے بحفاظت اپنی یونیورسٹیوں کو واپس پہنچ گئے۔
ایڈیٹر

احمد علی کیف نے یونیورسٹی آف لاہور سے ایم فل کی ڈگری حاصل کر رکھی ہے۔ پبلک نیوز کا حصہ بننے سے قبل 24 نیوز اور سٹی 42 کا بطور ویب کانٹینٹ ٹیم لیڈ حصہ رہ چکے ہیں۔